بد گمانیوں سے بچیں اور دوسروں کے لئے آسانی پیدا کریں۔

حضرت ابوہریرہ رضی اللہ تعالیٰ عنہ فرماتے ہیں کہ رسول پاکﷺ نے فرمایا کہ اپنے آپ کو بدگمانیوں سے بچائو اس لئے کہ بدگمانی سے جو بات کی جائے وہ سب سے زیادہ جھوٹی ہوتی ہے اور دوسرو ںکے معاملات میں معلومات مت حاصل کرتے پھرو اور ٹوہ میں مت لگو اور نہ آپس میں تکرار کرو اور نہ ایک دوسرے سے بغض رکھو اور نہ ایک دوسرے کی کاٹ میں لگو اور اللہ کے بندے بنو اور آپس میں بھائی بھائی بن کر زندگی گزارو۔ (بخاری مسلم)

Hazrat Abu Hurayrah (may Allah be pleased with him) says that the Holy Prophet (peace and blessings of Allah be upon him) said: Protect yourself from suspicions because what is said with suspicion is the most false and do not seek information in the affairs of others. Stick and do not quarrel with each other and do not hate each other and do not cut each other and be a servant of Allah and live as brothers. (Bukhari Muslim)

حضرت ابوہریرہ رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے روایت ہے کہ ایک دیہاتی نے مسجد میں پیشاب کردیا تو صحابہؓ اس پر خفا ہونے لگے۔ حضورﷺ نے فرمایا: ’’اس کو چھوڑ دو اور اس کے پیشاب پر پانی کا ایک بڑا ڈول بہادو اور تم سختی کے لیے نہیں بھیجے گئے ہو۔ اس لیے بھیجے گئے ہو کہ آسانی پیدا کرو۔ (بخاری)

It is narrated from Hazrat Abu Hurayrah that when a villager urinated in the mosque, the Companions became angry with him. The Prophet (peace and blessings of Allah be upon him) said: Leave him alone and pour a big bucket of water on his urine and you have not been sent for hardship. Sent to make things easier. (Heater)

Leave a Reply

Your email address will not be published.