خود اعتمادی پیدا کرنے کا ضابطہ

ہر انسان اپنے آپ کو کسی ناکسی طرح سے اہل بنانے کی کوشش میں مگن نظر آتا ہے ۔کوئی اعلی تعلیم حاصل کرکے بھی ناکام ہے تو کوئی معمولی تعلیم کے ساتھ صنعت کا مالک بنا بیٹھا ہے اور اعلی تعلیم یافتہ طبقہ کو روزگار فراہم کرنے کے ساتھ بڑی کامیابی سے اپنی صنعت کو ترقی کی طرف لئے جا رہا ہے۔ایسا اس لئے ہے کہ اسے اپنی صلاحیتوں پر اعتماد ہے۔ اب ضرورت اس بات کی ہے کہ نوجوانوں کو بتایا جائے کہ کس طرح انسان خود اعتمادی حاصل کر سکتا ہے۔

مشہورزماں مصنف نیپولین ہل نے اپنی کتاب تھنک اینڈ گرو رچ میں خود اعتمادی حاصل کرنے کا طریقہ بیان کیا ہے ۔یہاں اسی کا اردو ترجمہ پیش کیا جارہا ہے۔

خود اعتمادی کا ضابطہ

First: I know I have the ability to achieve the object of my Definite Purpose in life, therefore, I DEMAND of myself Persistent, Continuous action toward its attainment and I here and now promise to render such action.

پہلا : میں جانتا ہوں کے میں زندگی میں اپنےمقرر مقصد کو حاصل کرنے کی صلاحیت رکھتا ہوں، لہذا، میں اپنے آپ سے وعدہ کرتا ہوں کے میں اس مقصد کے حصول کے مسلسل کوشش کرتا رہوں گا۔

Second: I realize the dominating thoughts of my mind will eventually reproduce themselves in outward, physical action and gradually transform themselves into physical reality, therefore, I will concentrate my thoughts for thirty minutes daily, upon the task of thinking of the person I intended to become, thereby creating in my mind a clear mental picture of that person.

دوسرا: میں جانتا ہوں کہ میرے ذہن کے غالب خیالاتب بالآخر خود کو حقیقی طور پر ظاہر کریں گے۔ اس لئے میں روزانہ تیس منٹ تک اپنے خیالات کو اس شخص کے بارے میں سوچنے پر مرکوز رکھوں گاجس کے جیسا میں بننا چاہتا ہوں(یا جو بننا چاہتا ہوں) اس عمل سے میرے ذہن میں اس شخص کی ایک صاف تصویر بننے لگے گی۔

Third: I know through the principle of auto-suggestion, any desire that I persistently hold in my mind will eventually seek expression through some practical means of attaining the object back of it, therefore, I will devote ten minutes daily to demanding of myself the development of SELF-CONFIDENCE.

تیسرا: میں جانتا ہوں کہ کوئی بھی خواہش جو میں خودکار تجویزی عمل کے اصول کی مدد سے اپنے ذہن میں رکھوں گا، وہ خواہش اپنے مقصد کو حاصل کرنے لئے عملی مشق کی کوشش کریگی۔ اس لئے میں روزانہ دس منٹ اپنے آپ میں خود اعتمادی پیدا کرنے کی مشق کروں گا۔

Fourth: I have clearly written down a description of my DEFINITE CHIEF AIM in life and I will never stop trying, until I shall have developed sufficient self-confidence for its attainment.

چوتھا: میں نے زندگی کے اہم مقصد کی واضح طور پر تفصیل لکھ دی ہے۔ اور میں اس وقت تک کوشش نہیں چھوڑوں گا جب تک کہ اس کے حصول کے لئے درکار خوداعتمادی میرے اندر پیدا نہ ہوجاۓ۔

Fifth: I fully realize that no wealth or position can long endure, unless built upon truth and justice, therefore, I will engage in no transaction which does not benefit all whom it affects. I will succeed by attracting to myself the forces I wish to use, and the cooperation of other people. I will induce others to serve me , because of my willingness to serve others. I will eliminate hatred, envy, jealousy, selfishness and cynicism, by developing love for all humanity, because I know that a negative attitude toward others can never bring me success. I will cause others to believe in me, because I will believe in them and in myself.

پانچواں: میں اچھی طرح سمجھتا ہوں کہ کوئی بھی دولت یا عہدہ اس وقت تک برقرار نہیں رہ سکتا جب تک وہ سچائی اور انصاف پر قائم نہ ہوں، اس لئے میں کوئی ایسا کام نہیں کروں گا جس سے ان سب کو فائدہ نہ پہنچے جن پر اس کام کا اثر ہوتا ہے۔میں دوسرےلوگوں کی مدد سے اور ان قوتوں کو اپنی طرف متوجہ کرکے کامیاب ہوجاؤں گاجنہیں میں استعمال کرنا چاہتا ہوں۔ میں دوسروں کو میری مددکرنے پر آمادہ کروں گا کیونکہ میں بھی ہمیشہ ان کی مدد کرتا رہوں گا۔میں پوری انسانیت سے محببت کروں گا اور نفرت، حسد، خودغرضی اور کینہ پروری کو ختم کروں گاکیونکہ میں جانتا ہوں کہ دوسروں کے تعلق سےمنفی جذبات مجھے کبھی کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔میں خود پر اور دوسروں پر بھروسہ کروں گااس طرح وہ بھی مجھ پر یقین کریں گے۔

I will sign my name to this formula, commit it to memory and repeat it aloud once a day, with full FAITH that it will gradually influence  my THOUGHTS and ACTIONS so that I will become a self-reliant person.

میں اس ضابطہ پر اپنے نام پر دستخط کروں گا، اسے اپنی یادداشت میں چسپاں کروں گا اور پورے یقین کے ساتھ دن میں ایک بار اسے بلند آواز سے دہراؤں گا، کہ یہ آہستہ آہستہ میرے خیالات اور اعمال کو متاثر کرے گا تاکہ میں خود انحصار اور کامیاب انسان بن جاؤں۔

اس طرح انسان خودکار تجویزی عمل کے ذریعےاپنے اندر خود اعتمادی پیدا کر سکتا ہے۔ خودکار تجویزی عمل یہ ہے کہ اپنے مقصد کو حاصل کرنے کے خیالات جان بوجھ کر سوچے جاۓ۔بار بار کامیابی کے خیالات آپ کو کامیابی حاصل کرنے میں درکار عمل کرنے پر آمادہ کریں گے۔خیالات انسان کے قابو میں ہوتے ہیں اس لئے اپنے خیالات کو بہتر بناکر اپنے مستقبل کو بہتر کیا جا سکتا ہے۔

جس طرح کامیابی کے خیالات انسان کو کامیابی کی طرف گامزن کرتے ہیں اسی طرح ناکامی کے خیالات انسان کو ناکام کردیتے ہیں ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.

One reply on “Self-Confidence Formula”

  • November 20, 2021 at 11:25 am

    This content is useful for self development. We can gain useful information which will help in our personal growth.Thank you Sir for your support for for solving doubts on my website.